بر یکنگ نیوز:

انتہا پسندی ، دہشت گردی اور نفرت آمیز مواد پر مبنی 19 لاکھ سے زائد پوسٹ ہٹادیں۔ فیس بک انتظامیہ

سماجی روابط کی معروف ویب سائٹ فیس بک انتظامیہ کا کہنا ہے کہ روا ں سال کے ابتدائی تین ماہ میں فیس بک سے شدت اور انتہا پسندی پر مبنی 19 لاکھ سے زائد پوسٹ ہٹادیں۔

فیس بک نے سال 2018 کی پہلے تین ماہ کی کارکردگی رپورٹ میں کہا ہے کہ انتہا پسندی ، دہشت گردی اور نفرت آمیز مواد پر مبنی تحریروں ، تقاریر ، تصاویر اور ویڈیوز کو فیس بک سے ہٹادیا گیا۔ یہ مواد کالعدم انتہا پسند جماعتوں داعش اور القاعدہ کے اکاؤنٹس سے اپ لو ڈ کیا گیا تھا۔

فیس بک انتظامیہ نے یہ بھی کہا ہے کہ فیس بک سے ہٹائی گئی پوسٹس کی تعداد  19 لاکھ سے زائد ہے جو کہ گزشتہ برس ہٹائی گئ پوسٹس کے مقابلے میں دو گنا ہے۔

انتظامیہ نے کہا کہ یہ اس بات کی نشاندہی ہے کہ فیس بک شدت پسندی کی مخالفت میں اپنی  پالیسی کو بہتر بنانے اور صارفین کو مثبت ، محفوظ مواد فراہم کرنے کے انپنے وعدے پر ثابت قدم ہے۔

خیال رہے کہ رواں سال کے آغاز سے ہی فیس بک انتظامیہ کو پر تشدد مواد کو ہٹانے کے لیے یورپی یونین کی جانب سے دباؤ کا سامنا ہے ۔ اس کے علاوہ فیس بک کو صارفین کا ڈیٹا لیک ہونے کے حوالے سے بھی مشکلات اور مالی نقصان کا سامنا ہے۔

Check Also

فیس بک کا صارفین کی آسانی کے لیے میسینجر میں ’’ان سینڈ فیچر ‘‘ متعارف کرانے کا اعلان

سماجی روابط کی ویب سائٹ واٹس ایپ نے اپنے صارفین کو یہ سہولت فراہم کی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Anmol TV