بر یکنگ نیوز:

ایک انتہائی عام عادت جو آپکو برین ہیمرج کا شکار بنا سکتی ھے۔ کہیں آپ کے اندر بھی تو وہ چیز یا عادت تو نہیں؟

اگر تو آپ اس ڈر سے یہ کام کرنے سے گریز کرتے ہیں تو بری خبر یہ ہے کہ یہ عادت زیادہ سنگین مرض کا باعث بھی بن سکتی ہے۔

جی ہاں ناشتہ نہ کرنا فالج جیسے جان لیوا مرض کا خطرہ بڑھا دیتا ہے۔

یہ بات جاپان میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

اوساکا یونیورسٹی کے ماہرین کی 13 سالہ تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ناشتہ چھوڑنے کی عادت موٹاپے کے ساتھ ساتھ فالج کا خطرہ 30 فیصد تک بڑھا دیتی ہے۔

اس تحقیق کے دوران 45 سے 74 سال کی عمر کے 80 ہزار مرد و خواتین کی ناشتے کی عادات کا جائزہ لیا گیا جن میں اس سے قبل کینسر یا خون کی شریانوں کے امراض کی کوئی تاریخ نہیں تھی۔

تحقیق سے معلوم ہوا کہ جو لوگ ہفتے میں 5 بار ناشتہ نہیں کرتے ان میں برین ہیمرج (دماغ میں خون کی شریان پھٹ جانا) کا خطرہ نمایاں حد تک بڑھ جاتا ہے۔

اس تحقیق کے درانیے کے دوران 4 ہزار کے قریب افراد کو فالج کا سامنا ہوا، 870 کو دل کے مسائل کی شکایت ہوئی۔

محققین ناشتہ نہ کرنے اور امراض قلب کے درمیان کوئی تعلق تو دریافت نہیں کرسکے مگر انہوں نے فالج اور صبح کی پہلی غذا کے درمیان تعلق ضرور ڈھونڈ لیا۔

محققین نے کہا ہے کہ ہفتے میں محض ایک بار ناشتہ کرنا برین ہیمرج کا خطرہ 36 فیصد تک بڑھا دیتا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ صبح کے وقت جب کوئی شخص اٹھتا ہے تو بلڈ پریشر عام طور پر بڑھنا شروع ہوتا ہے اور 2 سے 3 گھنٹے تک عروج پر پہنچ جاتا ہے جو ایک معمول کا عمل ہے تاہم ناشتہ نہ کرنا بلڈ پریشر کی شدت میں اضافہ کرتا ہے اور ایسا طویل المعیاد بنیادوں پر ہو تو فالج کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

یہ تحقیق طبی جریدے اسٹروک میں شائع ہوئی۔

Check Also

نہار منہ فائدہ منداور نقصان پہنچانے والی غذائیں

صحت مند غذائی اشیا اور پھل و سبزیاں ویسے تو صحت کے لیے فائدہ مند …

error: Anmol TV
Anmol TV انمول ٹی وی

FREE
VIEW